گھر میں رہا کریں!

یہ مشروع اور مسنون ہے کہ اہل شر، بے کار ،فضول، آوارہ اور ناکارہ لوگوں سے دور رہ کر آپ گھر میں گوشہ نشین رہیں۔ اس صورت میں آپ کو قلبی اطمینان اور روحانی سکون ملے گا۔ آپ کا ذہن تیز کام کرے گا، آپ کی معلومات بڑھیں گی۔

خی
ر و اطاعت کے کاموں سے روکنے والی مشغولیات سے دور رہنا ایک ایسی دوا ہے جس کو اہل دل نے استعمال کیا ہے اور کامیابی حاصل کی ہے۔ یہی میں آپ سے کہنا چاہتا ہوں کہ برائی ، لغویات اور گنواروں سے الگ رہیں تو عقل بڑھے گی۔ عزت کی حفاظت ہوگی، خدا سے لو لگانے کا موقع ملے گا۔ وہ جگہیں جہاں جمع ہونا اور لوگوں سے بات چیت اچھی سمجھی جاتی ہے باجماعت نمازیں، جمعہ ، علم کی مجلسیں اور خیر پر تعاون کے مواقع ہیں۔ کاہلی اور بے کاری کی جگہوں سے دور رہیں۔ اپنی کھال بچائیے۔ اپنی خطا پر روئیے، اپنی زبان پر قابو رکھیں اور گھر میں بیٹھیں۔ بے کار لوگوں کے ساتھ اُٹھنا بیٹھنا اپنے خلاف جنگ کرنا ہے، اپنے اندر کے امن و امان کو تباہ کرنا ہے، کیونکہ یہ گنوار افواہ باز ہوتے ہیں، فضولیات پھیلاتے ہیں۔ فتنوں اور حادثات میں نمک مرچ لگا کر پھیلاتے ہیں اور ایسا آپ کو ڈرا دیں گے کہ آپ موت سے پہلے دس مرتبہ مر جائیں۔ اگر یہ تمھارے درمیان نکل آئیں تو تمھیں بہکانے میں کوئی کمی نہ کریں۔
مجھے پوری اُمید ہے کہ آپ کمرہ میں بیٹھیں گے ، اپنے کام سے کام رکھیں گے۔ ہاں اگر بھلی بات یا خیر کا کام ہوتو اس میں شریک ہوں، ایسا کریں گے تو دل پرسکون رہے گا، وقت ضائع ہونے سے بچے گا، عمر برباد نہ ہوگی، زبان غیبت سے بچے گی، کان بری بات نہ سنیں گے، نفس میں سوء ظن پیدا نہ ہوگا۔ جو اس کا تجربہ کرے گا ، جان لے گا۔ جو اوہام کی سواری پر بیٹھے ، گنواروں میں وقت گزارے، اسے دور ہی سے سلام!
٭…٭
{لا تحزنDon't Be Sad غم نہ کریں، صفحہ ۳۵}
(مئولف : ڈاکٹر عائض القرنی، ترجمہ : غطریف شہباز ندوی)

<<< پچھلا صفحہ اگلا صفحہ >>>

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔


اپنی قیمتی رائے سے آگاہ کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

Shoaib Saeed Shobi. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.